اورنج لائن منصوبے کا95فیصد سے زائد کام مکمل،حتمی ڈیڈلائن 20نومبر مقرر
Share :



لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل محمد عثمان معظم نے کہا ہے کہ لاہور اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کا95 فیصد سے زیادہ کام مکمل کیا جا چکا ہے۔ منصوبے کا خاطر خواہ سول ورک مکمل کر کے اسے الیکٹریکل و مکینیکل ورکس اور گاڑیوں کی ٹیسٹنگ و کمشننگ کے لئے 20 مئی کو چینی کنٹریکٹر کے حوالے کیا جا چکا ہے جو چھ ماہ میں اپنا کام ختم کرے گا۔ توقع ہے کہ اورنج لائن منصوبے کا تعمیراتی کام20 نومبر تک ہر لحاظ سے مکمل کر لیا جائے گا۔ وہ جی پی او چوک کے قریب زیر زمین تعمیر کئے جانے والے میٹرو سٹیشن پر منصوبے کے معائنے کے موقع پر ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو کر رہے تھے۔ اس موقع پرچیف انجینئر مظہر حسین خان، پراجیکٹ ڈائریکٹر حماد الحسن، ڈپٹی ڈائریکٹر اسد اور دیگر متعلقہ افسران بھی ہمراہ  تھے۔ انہیں بتایا گیا کہ ڈیرہ گجراں سے علی ٹاؤن تک میٹر ٹرین کا 27 کلومیٹر طویل ٹریک بچھایا جا چکا ہے۔میکلوڈ روڈ جی پی او چوک سے چوبرجی تک 1.7 کلومیٹر حصہ زیر زمین تعمیر کیا گیا ہے۔مجموعی طور پر منصوبے کا 95فیصد سے زیادہ کام مکمل کیا جا چکا ہے اور کل 26 سٹیشن بنائے گئے ہیں۔جی پی او چوک اور جین مندر کے قریب دو زیر زمین سٹیشن تعمیر کئے گئے ہیں۔ڈائریکٹر جنرل ایل ڈی اے نے بتایا گیا کہ مجموعی طورپرمنصوبے کا94.72فیصد تعمیراتی کام مکمل ہو چکا ہے -ڈیرہ گجراں سے چوبرجی تک پیکیج ون کا96.03فیصد‘ چوبرجی سے علی ٹاؤن تک پیکیج ٹو کا 94.17فیصد‘پیکیج تھری ڈپو کا94.90فیصد جبکہ پیکیج فور سٹیبلینگ یارڈ کی تعمیر کا96.34فیصد کام مکمل کیا جا چکا ہے۔اس کے علاوہ منصوبے کا96.16فیصد الیکٹریکل ومکینیکل ورکس بھی مکمل کر لیا گیا ہے۔

 
TOP