زرعی اراضی کا رہائشی استعمال روکنے کیلئے کثیر المنزلہ عمارتیں بنا نے کافیصلہ
Share :



 لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے وائس چیئرمین ایس ایم عمران نے بتایا ہے کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان کے ویژن کے تحت لاہور میں کثیرالمنزلہ عمارتوں کی تعمیر کی حوصلہ افزائی کے لئے نجی شعبے کے ماہرین تعمیرات، ٹاؤن پلانرز اور دیگر سٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے تعمیراتی قواعد میں ترمیم کا مسودہ تیار کر لیا گیا ہے۔ گزشتہ روز منعقدہ ایک اجلاس کے دوران انہوں نے بتایا کہ قواعد کے اس مسودے کے بارے میں شہریوں اور متعلقہ افراد کی آرا معلوم کرنے کے لئے سیمینارز اور میڈیا ٹاک شوز کا اہتمام کیاجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ بڑھتی ہوئی آبادی کی رہائشی ضروریات پورا کرنے،خوراک اور زرعی اجناس کی فراہمی کے لئے قیمتی اراضی کو زرعی مقاصد کی خاطر بچانے کے سلسلے میں کثیر المنزلہ عمارتوں کی تعمیر کو فروغ دینا وقت کا اہم تقاضا ہے۔اس موقع پر انہوں نے مسودہ میں ترامیم اور بہتری تجویز کرنے کے لئے تشکیل دی جانے والی کمیٹی کے ارکان کی خدمات کو خراج تحسین بھی پیش کیا۔ اجلاس میں ایل ڈی اے کی گورننگ باڈی کے ممبر انجینئر عامر ریاض قریشی‘ چیف ٹاؤن پلانر سید ندیم اختر زیدی‘ڈائریکٹر ٹاؤن پلاننگ طارق محمود‘ چیف میٹروپولیٹن پلانر اظہر علی، ڈائریکٹر پی اینڈ ڈی اسلم پرویز، ایس پی ٹریفک آصف اور نجی شعبے کے نمائندوں نے شرکت کی۔

اس حوالے سے شہریوں سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ کثیرالمنزلہ عمارتوں کی تعمیر حکومت کا احسن اقدام ہے۔

TOP